زرداری،نوازکوچھوڑیں،تبدیلی لائیں:آفریدی کاعمران خان کومشورہ

urduwebnews 23 May, 2021 سپورٹس

کراچی:قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وجارح بیٹسمین شاہد آفریدی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان اب سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم نواز شریف کو چھوڑدیں اور وہ تبدیلی لے کر آئیں جس کے لیے ہم نے ووٹ دیا تھا۔ سما ٹی وی کے پروگرام 'سوال احتشام امیر الدین کے ساتھ 'میں گفتگو کرتے ہوئے مذکورہ بیان دیا اور اس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے۔ پروگرام میں اینکر کے سوال پر وزیراعظم عمران خان کو مشورہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ' عمران بھائی جب وزیراعظم نہیں تھے تب وہ جو بات کرتے تھے ساری قوم کھڑی ہوجاتی تھی اب وہ اپنی چیزوں کی وضاحتیں بہت دیتے ہیں'۔ انہوں نے کہا کہ 'عمران خان، زرداری اور نواز شریف کو چھوڑ دیں، ڈھائی سے 3 سال سے انہی کے پیچھے پڑے ہوئے ہیں'۔ شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ 'میں نے جہاں بھی انہیں سنا ہے، وہ کسی بھی چیز کے افتتاح پر جاتے ہیں تو زرداری، نواز شریف کا نام لیتے ہیں'۔ انہوں نے مزید کہا کہ 'اس چیز کو چھوڑدیں کہ پچھلی حکومتوں نے کیا کیا، آپ کیا کررہے ہیں؟ اللہ نے آپ کو یہ موقع دیا ہے آپ کرکے دکھائیں۔ شاہد آفریدی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان وہ تبدیلی لے کر آئیں جس کے لیے ہم نے ووٹ دیا تھا، لوگوں کو عمران خان سے بہت امیدیں ہیں مگر انہیں سب کو ساتھ لے کر چلنا ہوگا چاہے وہ اپوزیشن ہی کیوں نہ ہو'۔ بوم بوم آفریدی نے مزید کہا کہ 'عمران خان نئے پاکستان کے بجائے پرانے پاکستان کو ٹھیک کرلیں، پرانا پاکستان برا نہیں ہے بس سب کو ساتھ لے کر چلیں، جو اچھا کام کررہا ہے میں ہر اس شخص کے ساتھ ہوں'۔ 'اپنی سیاسی جماعت بنانے کا کوئی ارادہ نہیں' سیاست میں آنے سے متعلق سوال پر شاہد آفریدی نے کہا کہ 'سچ کہوں تو اس طرف آنے پر نہ میرا دل مان رہا ہے نہ دماغ'۔ ان کا کہنا تھا کہ سیاست دانوں کو سیاست کا مطلب پتا ہونا چاہیے، سیاست کا مطلب ہے حقدار کو اس کا حق دینا۔ شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ یہ سسٹم ایسا بنا ہوا ہے کہ 2 لوگوں سے تبدیل نہیں ہوپائے گا، اسے تبدیل کرنے میں وقت لگے گا، خدانخواستہ میں اس سسٹم میں جا کر خراب نہ ہوجاؤں سسٹم اتنا مضبوط ہے وہ اتنے عرصے سے چلتا ہوا آرہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ عمران بھائی کرپٹ نہیں ہیں، اچھے انسان ہیں لیکن وہ سسٹم میں پھنس گئے ہیں'۔ شاہد آفریدی نے کہا کہ 'یہ کوئی کرکٹ کی ٹیم تو نہیں ہے کہ 16 لڑکے گراؤنڈ میں لے کر گئے اور میچ کھیل لیا، یہ 22 سے 24 کروڑ عوام کی ٹیم ہے، انہیں لے کر چلنا ہے'۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ 'میں دیکھتا ہوں کہ کابینہ کے جتنے بھی اراکین ہیں وہ کسی نہ کسی جماعت میں رہ چکے ہیں جن کے بارے میں عمران خان نے کہا تھا کہ اگر کوئی ایسی سیاست کرے گا تو میں ایسی سیاست نہ کروں اور وہی لوگ آج ان کے ساتھ ہیں'۔ شاہد آفریدی نے کہا کہ 'ٹیم کا انتخاب بہت اہم ہے، اچھے اور ایماندار لوگ ان کے ساتھ ہونے چاہئیں جو ملک سے اور عمران خان سے مخلص ہوں'۔ اپنی سیاسی جماعت بنانے سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ 'میرا اپنی سیاسی جماعت بنانے کا کوئی ارادہ نہیں ہے'۔ شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ 'میرے لیے شاہد آفریدی فاؤنڈیشن سب سے زیادہ اہم ہے، میں جتنی خدمت کرسکتا ہوں کرتا رہوں گا، کل یا پرسوں کیا ہوگا اللہ جانتا ہے'۔ انہوں نے کہا کہ 'اصل چیز یہ ہے کہ ہم نے سیاست کو، مذہب کو اپنا کاروبار بنالیا ہے، انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ کرسی بہت بڑی طاقت ہے لیکن یہ ہر ایک کو نہیں ملتی، جس کو ملتی ہے اس سے پوچھا بھی بہت جاتا ہے'۔