ذہین سرچ انجن

malik shahid 25 Feb, 2021 سائنس وٹیکنالوجی

اگرچہ موجودہ دور کے سرچ انجن بہت تیزہیں اور چند ہی لمحوں میں آپ کومطلوبہ مواد تک رسائی دلادیتے ہیں، لیکن ماہرین کا خیال ہے کہ ابھی یہ سرچ انجن ”ذہین “نہیں ہیں۔ مثال کے طورپر، آپ کسی سرچ انجن میں کوئی سوال ٹائپ کیجئے، جیسے:”کس خاتون نے ایک سے زائدبارنوبل انعام حاصل کیاہے“؟۔ آپ کو چند کلک کرنے اورتھوڑاسامتن پڑھنے کے بعد سوال کا جواب مل جائے گا۔ لیکن ماہرین کے مطابق، سرچ انجن کی یہ صلاحیت ابھی بہت محدودہے۔اس کی وجہ یہ ہے کہ سرچ انجن بذات خود یہ بات نہیں جانتے کہ سوال میں کیا بات پوچھی جارہی ہے۔وہ کسی بھی ویب پیج کی رینکنگ صرف یہ دیکھ کرکرتے ہیں کہ مطلوبہ لفظ کسی صفحے پرکتنی بار لکھاہواہے اور کہ کس صفحے کو سب سے زیادہ مرتبہ استعمال کیاگیاہے۔ سرچ انجن یہ بات بالکل نہیں جانتے کہ نوبل پرائز ایک انعام ہے اور یہ انعام انسانوں کو ان کی خدمات کے صلے میں دیاجاتاہے۔ سرچ انجن میں ذہانت پیداکرنے کے لئے، ماہرین ایک نئی تیکنیک”سیمنٹک میٹاڈیٹا“استعمال کررہے ہیں۔ اس تیکنیک میں ہر ویب پیج کو ایک ”ریڈایبل ڈیٹابیس مشین“کے ساتھ منسلک کیاجائے گا، جسے فقرات کی ساخت کی سمجھ بوجھ ہوگی۔اس طرح سرچ انجن، صرف ویب پیجز کو نہیں، بلکہ سوال کے جواب کو ڈھونڈے گا۔ مثلاََ سرچ انجن ، اوپربیان کئے گئے سوال سے متعلقہ ویب پیجز ڈھونڈھنے کی بجائے، صرف سوال کا جواب دے گا، جو کہ یوں گا:”میری کیوری“۔