سائنسدانوں نے محسوس کرنے، فیصلہ اور عمل کرنے والا انقلابی مادہ تیار کرلیا

urduwebnews 12 Nov, 2021 سائنس وٹیکنالوجی

میسوری(اردو ویب نیوز)سائنسدانوں نے ’میٹا مٹیریئل‘ کہلانے والے مادّے کی ایک نئی قسم تیار کرلی ہے جو اس کی پچھلی اقسام سے کہیں بہتر ہے۔ یہ نیا میٹا مٹیریئل اپنے ماحول کے لحاظ سےردِعمل دکھاتا ہے، آزادانہ طور پر فیصلہ کرتا ہے اور انسان کے بغیر بعض عمل بھی کرتا ہے۔ مثلاً ایسے مادوں سے ڈرون بنایا جائے تو وہ ہوا کی رفتار، بارش اور دیگر کیفیات کو محسوس کرکے اپنا راستہ بہتر بناسکتا ہے اور یوں بحفاظت کسی جگہ اپنا سامان پہنچاسکتا ہے۔یونیورسٹی آف میسوری میں انجینیئرنگ کے ماہر گؤلیانگ ہوانگ نے بتایا کہ ان کا تیارکردہ ذہین مٹیریئل عین قدرتی پودوں اور جانوروں کی طرح احساس کرتا ہے، معلومات کو پروسیس کرتا ہے اور اس پر ردِ عمل یا اظہار کرتا ہے۔ یعنی وینس ٹریپ کیڑے کی موجودگی پر فوری طور پر بند ہوجاتا ہے اور گرگٹ رنگ بدلتا ہے عین یہی مٹیریئل بھی یہ کام کرسکتا ہے۔ یوں میٹامٹیریئل کو طیاروں میں لگا کر ان کا شور کم کیا جاسکتا ہے اور دیگر کئی کاموں میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔ لیکن اس مٹیریئل کو کنٹرول کرنے کے لیے اس میں چپ کی ضرورت پڑتی ہے۔