”گولی بھی قبول“ایمرسن کالج بچائوتحریک زورپکڑ گئی

Muhammad Dastagir 01 Mar, 2021 علاقائی

ملتان(سہیل قریشی سے)ایمرسن کالج سمیت پنجاب کے دیگر بڑے کالجز کو یونیورسٹی بنانے کے خلاف احتجاج جاری ہے۔ملتان میں اساتذہ اور طلبہ نے بوسن روڈپراحتجاج میں بڑی تعداد میں شرکت کی اور نعرے لگائے۔ پی پی پی ایل اے پنجاب کے صدر ڈاکٹر طارق کلیم نے کہا کہ پنجاب کے تاریخی کالجز کا سودا قبول نہیں۔ کالجز کو کالج ہی رہنے دیا جائے نئی جامعات کے حق میں ہیں ہمارا مطالبہ ہے کہ سرکاری اراضی پر نئی جامعات تعمیر کی جائیں ۔کالج کے سٹیک ہولڈر اساتذہ اور طلبہ ہیں ہم لاٹھی اور گولی تو کھا لیں گے مگر اپنے اداروں پر ساز باز نہیں کرنے دیں گے۔حکومت بیرونی ایجنڈے پر تعلیم دشمن اقدامات بند کرے۔قبل ازیں طلبہ اور اساتذہ بڑی ریلی کی صورت میں ایمرسن کالج گیٹ پہنچے اور مین بوسن روڈ پر علامتی دھرنا دیا۔ ڈاکٹر طارق کلیم نے مزید کہا کہ اگر ہمیں سڑکوں پر کلاسز لینا پڑیں تو ہم سڑکوں پر بھی کلاسز لیں گے مگر اب احتجاج کا جو سلسلہ پورے پنجاب میں شروع ہوا ہے وہ تھمنے والا نہیں۔اس موقع پر ڈویژنل سیکرٹری پی پی ایل اے ملتان ڈویژن صغیر قریشی اور دیگر بھی موجود تھے۔