2 کروڑ 25 لاکھ بچے سکول سے باہر ،بہاول پورمیں پرنسپل کنونشن

Muhammad Dastagir 28 Feb, 2021 علاقائی

بہاول پور (سکندراعظم سے) تعلیمی پالیسی میں کوئی تبدیلی یا ردوبدل ہمارے اور قوم کے لیے ناقابل برداشت ہو گا ۔2 لاکھ پرائیویٹ تعلیمی ادارے ملک میں تعلیم کے شعبہ کا بوجھ اٹھائےہوئے ہیں۔60 فیصد سرکاری سکولوں کے ساتھ ہمارے ملک کی تعلیمی حالت حوصلہ افزا نہیں ہے۔اور ہم دنیا میں 125ویں نمبر پر ہیں ۔2 کروڑ 25 لاکھ بچے سکول سے باہر ہیں۔ ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر جنرل نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن ہدایت خان نے گرینڈ پرنسپل کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ماہر تعلیم اور ایسوسی ایشن فار اکڈیمک کوالٹی کے منیجر مجیب الرحمٰن ترین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا سکول سسٹم اکیسویں صدی کے مطابق ہوگا توہم کامیاب ہونگے پاکستان میں وسائل کا مسئلہ کبھی بھی نہیں رہا ہے ۔میڈیا اور ٹیکنالوجی کا زمانہ ہے اس سے استفادہ کرنے کی ضرورت ہے ۔ ریجنل ڈائریکٹر نافع عرفان انجم نے کہا کہ ہمارا مقصد ایسے طالب علم پیدا کرنا ہے جو نظریہ پاکستان پر اور اسلامائزیشن پر پورا اتریں۔ جنوبی پنجاب کے 11اضلاع میں اس طرح کی ٹریننگ ورکشاپ منعقد کروائیں گے۔ امیر جماعت اسلامی راجن پور عرفان اللّہ ملک نے کہا کہ بچے کو اچھا اور قابل انسان بنانا ہم سب کا فرض ہے ۔ تقریب میں میڈیا کوآرڈینیٹر نیشنل ایسوسی ایشن فار ایجوکیشن جنوبی پنجاب عارف حسین عاصم ضلعی ڈائریکٹر کامران کمال سمیت سکول سربراہان اور پرنسپل صاحبان نے شرکت کی۔