کالجزکویونیورسٹیزبنانے کیخلاف رحیم یارخان میں احتجاجی مظاہرہ

Muhammad Dastagir 25 Feb, 2021 علاقائی

رحیم یارخان (نعیم بشیر سے)پی پی ایل اے خواجہ فریدگورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج رحیم یار خان اور ڈویژن بہاولپور کی طرف سے گورنمنٹ ایمرسن کالج ملتان اور گورنمنٹ کالج حافظ آباد کو یونیورسٹی بنائے جانے کے خلاف کالج میں احتجاجی ریلی نکالی گئی جس کی قیادت ڈویژنل نائب صدر پروفیسر ظفر اقبال بسرا‘ ڈویژنل جنرل سیکرٹری پروفیسر ملک خدا بخش اور صدر لوکل یونٹPPLA پروفیسر ملک غلام سرور نے کی۔ شرکاء نے اس اقدام کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے دونوں کالجز کے اساتذہ اور طلبا سے اظہار یکجہتی کیا۔ صدر لوکل یونٹ نے ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹی بنائے جانے کے نوٹیفیکیشن منسوخ کرکے کالجز کی سابق حیثیت بحال کی جائے۔ڈویژنل نائب صدر پروفیسر ظفر اقبال بسرا نے کہا کہ آئندہ کسی کالج کو یونیورسٹی نہ بنایا جائے اگر ضروری ہو تو الگ سے یونیورسٹی کا قیام عمل میں لایا جائے۔ ڈویژنل جنرل سیکرٹری پروفیسر ملک خدا بخش نے کہا کہ یونیورسٹی بنائے جانے کے نتیجے میں فیسوں میں بہت اضافہ ہو جاتا ہے اور عام آدمی کے بچے اعلی تعلیم سے محروم رہ جاتے ہیں۔ اگر مطالبات نہ تسلیم کئے گئے تو احتجاج کا دائرہ پورے پنجاب تک پھیلا دیا جائے گا۔ ریلی میں اساتذہ کی بڑی تعداد شریک ہوئی جن میں ڈاکٹر خالد محمود‘ پروفیسر رشمت علی‘ پروفیسر محمد مسلم‘ پروفیسر ذوالفقار علی‘ پروفیسر باسط علی ججہ‘ پروفیسر عابد خان گرگیج‘ پروفیسر عبدالرحمن‘ پروفیسر صفدر علی ساجد اور پروفیسر محمد افضل بیگ سمیت دیگر اساتذہ شامل تھے۔