APUBTA کا مطالبات کی منظوری تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان

urduwebnews 06 Dec, 2021 علاقائی

ملتان(اردو ویب نیوز)APUBTA کی کور کمیٹی کا 14 واں اجلاس صدر ڈاکٹر سمیع الرحمان کی زیر صدارت ہوا۔اجلاس میں ڈاکٹر ہدایت اللہ، ڈاکٹر امتیاز احمد، پروفیسر مشتاق ساجد، ڈاکٹر ریحانہ کوثر، ڈاکٹر وقار شاہ، ڈاکٹر منظور احمد، ڈاکٹر خواجہ طاہر، ڈاکٹر حافظ رحمان، ڈاکٹر آصف جان، ڈاکٹر امتیاز شفیق، ڈاکٹر ظہیر، ڈاکٹر عفشیں عارف اور ڈاکٹر معروف شامل تھے۔ اجلاس کا مسودہ بی پی ایس فیکلٹی کے لیے پروموشن پالیسی پر پیش رفت تھا۔ ڈاکٹر امتیاز احمد نے کمیٹی کو بتایا کہ ایچ ای سی نے مجوزہ مسودہ یونیورسٹیوں کو بھیج دیا ہے۔ کمیٹی کے ارکان نے اس مسودے پر بحث کی۔ ایچ ای سی کی اس کاروائی پر سوالات اٹھاتے ہوئے کہا گیا کہ یونیورسٹیوں کو مسودہ بھیجا تو گیا ہے مگر انہوں کوئی حتمی تاریخ نہیں دی گئی جس میں وہ اپنی آرا دیں جو افسوس ناک ہے۔ ایچ ای سی کی جوائنٹ کمیٹی کے اپوبٹا ممبران ڈاکٹر آصف جان اور ڈاکٹر ریحانہ کوثر نے بتایا کہ ایچ ای سی نے ان کے ساتھ مشترکہ کمیٹی کے تیسرے اجلاس کے منٹس شیئر نہیں کیے ہیں اور ایم ایس/ایم فل ٹرمینل ڈگری کے ساتھ فیکلٹی کی ترقی کے لیے مجوزہ پالیسی نہیں ہے۔ صاف انہوں نے بتایا کہ میٹنگ میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ ایم ایس/ایم فل ٹرمینل ڈگریوں والی فیکلٹی کو متوازی ٹریک کے ذریعے مختلف ناموں (جونیئر لیکچرار (بی پی ایس 18)، لیکچرر (بی پی ایس 19) اور لیکچرر (بی پی ایس 20) کے ذریعے ترقی دی جائے گی اور وہ ان کی سنیارٹی اور گریڈ کے مطابق مالی فوائد دیے گئے لیکن ڈرافٹ میں یہ غائب ہیں۔ کور کمیٹی نے تجویز دی کہ APUBTA پر امن احتجاج پالیسی کی منظوری تک جاری رہے گا جس میں ایم ایس/ایم فل ٹرمینل کی ڈگری رکھنے والے فیکلٹی ممبران کے لیے واضح سفارش کی جائے گی۔ کمیٹی نے تجویز دی کہ مقامی اے ایس اے بدھ 8 دسمبر کو 15 منٹ کی پر امن واک کریں۔ اس سرگرمی سے یونیورسٹیوں میں تدریسی سرگرمیاں متاثر نہیں ہونی چاہئیں۔ کمیٹی نے اس بات پر تبادلہ خیال کیا کہ بی پی ایس 17 (ریسرچ ایسوسی ایٹ/لیب انجینئر) میں تدریسی عملے کے لیے پروموشن پالیسی میں مزید بہتری اور وضاحت کی ضرورت ہے۔ کمیٹی نے یہ بھی تجویز کیا کہ ASA کی قیادت اور BPS فیکلٹی ممبران کو پالیسی پر غور کرنا چاہیے اور اپنی سفارشات/تجاویز HEC اور APUBTA کو بھیجنا چاہیے۔ APUBTA کور کمیٹی ED HEC سے ملاقات کرے گی تاکہ MS/MPhil ٹرمینل ڈگریوں کے حامل فیکلٹی ممبران کے بارے میں مسودے میں موجود ابہام پر تبادلہ خیال کیا جا سکے۔