فیس بک اور انسٹاگرام نے میانمار کی فوج پرپابندی لگادی

Muhammad Dastagir 26 Feb, 2021 عالمی

نیویارک:فیس بک اور انسٹاگرام نے اپنے پلیٹ فارمز پر میانمار کی فوج پر غیر معینہ مدت تک پابندی عائد کردی ہے۔ اسی طرح فوج کے زیرتحت سرکاری اور میڈیا اداروں کو بھی فیس بک اور انسٹاگرام پر خوش آمدید نہیں کہا جائے گا۔انہوں نے پابندی کی متعدد وجوہات کا ذکر بھی کیا، جسس میں میانمار کی فوج کی انسانی حقوق کی متعدد خلاف ورزیوں کی تاریخ بھی شامل ہے۔ یہ اقدام میانمار میں فروری کے شروع میں فوجی بغاوت کے ذریعے حکومت کا تختہ الٹنے پر کیا گیا ہے اور فیس بک کے مطابق فوج سے منسلک کمرشل اداروں کے اشتہارات پر بھی پابندی عائد ہوگی۔ فیس بک کے ایشیا پیسیفک کے پالیسی ڈائریکٹر رافیل فرینکل نے ایک بلاگ پوسٹ میں کہا کہ یکم فروری کی فوجی بغاوت اور تشدد کے بعد اس پابندی کی ضرورت تھی، ہمارا ماننا ہے کہ فیس بک اور انسٹاگرام پر میانمار کی فوج کی موجودگی کے خطرات بہت زیادہ ہیں۔