بھارتی پولیس اور سرکاری فوٹوگرافر کا مسلمان شہری پر وحشیانہ تشدد،ویڈیو وائرل

urduwebnews 26 Sep, 2021 عالمی

دسپور(اردو ویب نیوز) بھارتی ریاست آسام میں گھر خالی کرانے کے خلاف احتجاج کرنے والے ایک مسلمان شہری کو پولیس اہلکاروں نے ڈنڈوں سے مار مار کر ادھ موا کردیا جس کے بعد ایک سرکاری فوٹوگرافر نیم مردہ شخص پر بھی کودتا رہا۔ بھارت میں مودی سرکار نے اقلیتوں کا جینا دوبھر کردیا ہے۔ بی جے پی حکومت نے آسام میں لاکھوں افراد کو شہریت نہ دینے کا اعلان کیا ہے جس کے بعد لوگوں کو بے گھر کرنے کی مہم زور و شور سے جاری ہے۔زخموں سے چور شخص بے سدھ زمین پر لیٹا رہا اور اس دوران کارروائی کی عکس بندی کرنے والا سرکاری فوٹو گرافر بھی شہری پر تشدد کرتا رہا اور چھلانگیں مارکر نیم مردہ شخص پر کودتا رہا۔ انسانیت سوز بدترین تشدد کی ویڈیو وائرل ہونے پر صارفین نے مودی حکومت پر کڑی تنقید کی جب کہ اپوزیشن جماعتوں نے فوٹو گرافر اور پولیس اہلکاروں کی گرفتاری کا مطالبہ بھی کیا۔