سی پیک پر کام کی سست رفتار سے چینی کمپنیاں پریشانی کا شکار

urduwebnews 17 Sep, 2021 عالمی

اسلام آباد(اردو ویب نیوز)سینیٹ کی قائمہ کمیٹی نے پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) پر سست رفتار پیش رفت پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انگریزی اخبار کی رپورٹ کے مطابق پینل نے اس امر پر بھی افسوس کا اظہار کیا کہ گزشتہ 3 برس کےدوران سی پیک پر غیر تسلی بخش کارکردگی پر چینی کمپنیوں نے عدم اطمینان کا اظہار کیاہے۔ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے منصوبہ بندی اور ترقی کی صدارت کرتے ہوئے کمیٹی کے چیئرمین سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ چین سی پیک پر کام کی رفتار سے مطمئن نہیں ہے اور گزشتہ 3 برس کے دوران پورٹ فولیو پر کوئی پیش رفت نہیں دیکھی گئی۔انہوں نے کہا کہ مزید کہا کہ ’وہ رو رہے ہیں‘ اور چینی سفیر نے مجھ سے شکایت کی ہے کہ آپ نے سی پیک کو تباہ کر دیا ہے اور گزشتہ تین برس میں کوئی کام نہیں ہوا۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سی پیک امور خالد منصور نے بھی سلیم مانڈوی والا کی تائید کرتے ہوئے کہا کہ چینی کمپنیاں حکومتی اداروں اور ان کے کام کی رفتار سے مطمئن نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ خود گوادر ایئرپورٹ پر کام کی پیش رفت سے مطمئن نہیں ہیں اور پینل کو یقین دہانی کرائی ہے کہ معاملات اب بہتر کی جانب ہیں۔