کابل ایئرپورٹ کے قریب پھر راکٹ حملہ،دھماکوں کی آوازیں ،بھگدڑ مچ گئی

urduwebnews 30 Aug, 2021 عالمی

کابل(اردو ویب نیوز)افغانستان کے دارالحکومت کابل کے بین الاقوامی ایئرپورٹ کے قریب ایک علاقے سے راکٹ حملے کیے گئے ہیں تاہم یہ فوری طور پر واضح نہیں ہو سکا کہ راکٹ کس نے فائر کیے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے اے پی کی رپورٹ کے مطابق عینی شاہدین نے بتایا کہ راکٹ پیر کی صبح کابل کے سلیم کاروان محلے میں آکر گرے، دھماکوں کے بعد فائرنگ بھی کی گئی لیکن یہ بھی فوری طور پر واضح نہیں ہوسکا کہ فائرنگ کس نے کی ہے۔عینی شاہدین نے انتقامی کارروائیوں کے خوف سے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ انہوں نے تین دھماکوں کی آواز سنی اور پھر آسمان میں ایک روشنی اٹھتے دیکھی۔انہوں نے بتایا کہ دھماکوں کے بعد لوگ اِدھر اُدھر بھاگتے ہوئے نظر آئے، امریکی حکام نے رائے کے لیے درخواستوں کا فوری طور جواب نہیں دیا۔ امریکی فوجی کارگو طیاروں نے راکٹ فائر کیے جانے کے بعد بھی ایئر پورٹ سے انخلا جاری رکھا۔ وائٹ ہاؤس نے ایک جاری بیان میں کہا کہ حکام نے امریکی صدر جو بائیڈن کو کابل میں حامد کرزئی بین الاقوامی ایئرپورٹ پر راکٹ حملے سے آگاہ کیا۔ بیان میں کہا گیا کہ 'صدر کو بتایا گیا کہ ایئرپورٹ پر آپریشنز بلا تعطل جاری ہیں اور ان سے ان کے حکم کی دوبارہ تصدیق کی گئی کہ کمانڈر زمین پر ہماری افواج کی حفاظت کے لیے جو بھی ضروری ہو اسے کرنے کو ترجیح دینے کی اپنی کوششوں کو دوگنا کریں'۔