ہفتے میں چار دن کام اور تین چھٹیاں،قانون تیار،ملک کا نام جانیں؟

urduwebnews 01 Aug, 2021 عالمی

واشنگٹن ڈی سی(اردو ویب نیوز)جاپان اور آئس لینڈ میں مقبولیت کے بعد امریکی بھی ہفتے میں چار دن کام اور تین چھٹیوں کے قائل ہوگئے ہیں۔ خبروں کے مطابق، امریکی کانگریس میں کیلیفورنیا سے ڈیموکریٹ رکن مارک ٹکانو نے ایک قانون کا مسودہ جمع کروایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ہفتے میں چار دن کام ہو اور تین دن چھٹیاں دی جائیں۔مجوزہ قانون کے حق میں ٹکانو نے دنیا کے مختلف ممالک میں کیے گئے وسیع تجربات کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہفتے میں چار دن یعنی 32 گھنٹے کام سے کارکنان کی صحت بہتر رہے گی، اپنے اہلِ خانہ کے ساتھ زیادہ وقت گزار کر انہیں خوشی حاصل ہوگی اور ان کی کارکردگی بھی بہتر ہوگی۔ یہ تمام باتیں آج ثابت شدہ ہیں۔ مزدوروں اور صنعتی تنظیموں کی امریکی فیڈریشن کے صدر رچرڈ ٹرمکا نے بھی اس مجوزہ قانون کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تنخواہ کم کیے بغیر اوقاتِ کار میں کمی سے نہ صرف امریکا میں ملازمت کرنے والوں کو منصفانہ ماحول میسر آئے گا بلکہ زیادہ افراد میں کام تقسیم کرکے بیروزگاری کا مسئلہ حل کرنے میں بھی مدد ملے گی۔