جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ رول بیک نہیں ہوگا،متعلقہ سیکرٹری کی چھٹی

Muhammad Dastagir 02 Apr, 2021 عالمی

لاہور(اردوویب نیوز)وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہاہے کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے حوالے سے 29 مارچ اور 30 مارچ کے نوٹیفکیشن منسوخ کر دیئے گئے ہیں اوراس ضمن میں انسانی غلطی اور کلریکل غلطی کاامکان بھی مسترد نہیں کیا جاسکتا- وزارتی کمیٹی کی تحقیقات کی روشنی میں متعلقہ سیکرٹری کو عہدے سے ہٹا کر او ایس ڈی بنا دیا گیا ہے- جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کا قیام تحریک انصاف کے ایجنڈے میں شامل ہے اور اسی ایجنڈے کے تحت الیکشن میں حصہ لیا تا کہ دور دراز علاقوں کی محرومیوں کا ازالہ کیا جا سکے- ماضی میں جہاں 17 فیصد بجٹ جنوبی پنجاب کے لئے استعمال میں لایا جاتا تھا جبکہ پی ٹی آئی حکومت نے 33 فیصد بجٹ مختص کر کے رنگ فینسنگ کر دی تا کہ بجٹ کہیں اور منتقل نہ ہوسکے- وہ آج وزیراعلی آفس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے حوالے سے پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے-وفاقی وزیر مخدوم خسرو بختیار، صوبائی وزراء راجہ محمد بشارت،ہاشم جواں بخت، حسین جہانیاں گردیزی، محسن لغاری، سردار حسنین بہادر دریشک، ڈاکٹر محمد اختر ملک، شوکت لالیکا، معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان، طاہر بشیر چیمہ،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ او ردیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے-وزیراعلیٰ نے بتایاکہ ڈسٹرکٹ کے رولزآف بزنس پر مشتمل 30مارچ کے نوٹیفکیشن کو بھی کینسل کر دیاہے اور صوبائی وزیر خزانہ ہاشم جواں بخت کی سربراہی میں وزارتی کمیٹی کو نئے رولز آف بزنس بنانے کی ہدایت کی ہے کیونکہ ہم جنوبی پنجاب کوبہتر فعال اور اچھی ایڈمنسٹریشن دیں گے- وزیراعلیٰ نے بتایاکہ وزارتی کمیٹی جنوبی پنجاب میں پہلے سے 16محکموں کی تعداد تمام صوبائی محکموں تک بڑھانے سے متعلق اپنی سفارشات پیش کرے گی-کمیٹی جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو موثر اور فعال بنانے کیلئے بھی سفارشات پیش کرے گی- جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کا سنگ بنیاد جلد رکھنے کا جائزہ لے رہے ہیں -وزیراعلیٰ نے مزید بتایاکہ جنوبی پنجاب میں ملازمتوں کا کوٹہ مختص کرنے کیلئے بل کابینہ کے سامنے پیش کیاجائے گا او رمیں نے فیصلہ کیاہے کہ ہر ماہ ایک دن ملتان اور ایک دن بہاولپور میں بیٹھوں گا، تمام وزراء مہینے میں دو دن ملتان اور بہاولپور جا کر عوامی معاملات کاجائزہ لیں گے۔ ہم نے پہلی مرتبہ بہاولپور میں صوبائی کابینہ کا اجلاس بلایا، اب ملتان میں بھی کابینہ کا اجلاس جلد بلایا جائے گا اوریہ سلسلہ جاری رہے گا-ساؤتھ پنجاب سیکرٹریٹ کو مکمل طورپر فنکشنل کیاجائے گا اور کسی قسم کی رکاوٹ کو سامنے نہیں آنے دیں گے- کمیٹی 7روز میں اپنی حتمی سفارشات دے گی-وزیراعلیٰ نے سوالات کے جواب دیتے ہوئے کہاکہ میرا تعلق بھی جنوبی پنجاب کے پسماندہ علاقے سے ہے لیکن اب پورے پنجاب کو لیکر آگے بڑھ رہے ہیں -جنوبی پنجاب ایڈیشنل چیف سیکرٹری، ایڈیشنل آئی جی اور 16محکموں کے افسران تعینات کئے-جنوبی پنجاب کے بارے میں ابہام اور کنفیوژن سامنے آتے ہی قانونی کارروائی کی اور نوٹیفکیشن واپس لے لئے گئے ہیں -وزیراعلیٰ نے کہاکہ میں واضح طورپر بتانا چاہتاہوں کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو رول بیک نہیں کریں گے بلکہ اسے آگے بڑھائیں گے، وزارتی کمیٹی کی مشاورت سے مزید پیش رفت کی جائے گی-وزیراعلیٰ نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ رمضان المبار ک کے انتظامات کے سلسلے میں متعلقہ محکمے بھرپو ر انتظامات کررہے ہیں -313سہولت بازاروں میں اشیاء صرف 2018کے نرخ پر ملیں گی- وزیراعلیٰ نے کہاکہ عوام کو کورونا ایس او پیز فالو کرنے چاہئیں کیونکہ ہیلتھ سسٹم پر دباؤ بڑھ رہا ہے- آکسیجن کی کمی پوری کرنے کے لئے وفاق سے بھی رجوع کر رہے ہیں -میڈیا عوامی شعور بیدار کرنے اور آگاہی پھیلانے میں بھرپور ساتھ دے-وزیراعلیٰ نے کہاکہ سازشیں کرنے والے اپنا کام کرتے رہیں گے اور ہم عوامی خدمت کا اپنا مشن پورا کرتے رہیں گے-کابینہ کے حوالے سے وزیراعلیٰ نے بتایاکہ بہتری کی گنجائش ہر وقت موجود ہوتی ہے- وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے اتحادیوں کے بارے میں سوال کاجواب دیتے ہوئے کہاکہ ہم مشورے سنتے ہیں اور عمل بھی کرتے ہیں -اتحادیوں کے ساتھ معاملات ٹھیک ہیں ہمیں کوئی مسئلہ نہیں -وزیراعلیٰ نے بتایاکہ ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی کے ووٹ بینک میں بہت تیزی سے اضافہ ہورہاہے، ہار جیت الیکشن کاحصہ ہوتاہے،سپریم کورٹ کے احکامات پر عمل کیا جائے گا-ٹرانسفر پوسٹنگ معمول کی کارروائی ہے، کورونا لاک ڈاؤن کے دوران پولیس کی طرف سے رشوت لینے کی شکایت پر سخت کارروائی کی جائے گی-وفاقی وزیرخسرو بختیار نے کہاکہ جنوبی پنجاب کے عوام میں نوٹیفکیشن کی وجہ سے پیدا ہونے والے اضطراب پر فوری ایکشن لینے پر وزیراعلیٰ عثمان بزدار کے شکر گزار ہیں، جنوبی پنجاب کے عوام اپنے حقوق کے لئے جاگ رہے ہیں، پی ٹی آئی کراچی سے خیبر تک عوام کی نمائندہ جماعت ہے-پی ٹی آئی نے گزشتہ برس جنوبی پنجاب صوبے کے لئے اسمبلی میں قرارداد جمع کرائی ہے، اپوزیش کو دعوت دیتے ہیں کہ آ ئیں ملکر قوم کو درپیش مسائل حل کرتے ہیں -انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ انتخابی اصلاحات کے لئے وزیراعلیٰ نے سپیکر کو اپوزیشن کو بلانے کے لئے خط لکھ دیا ہے-دریں اثناء وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیر صدارت آج وزیر اعلی آفس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے حوالے سے اہم اجلاس منعقد ہواجس میں جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو بااختیار بنانے کیلئے تجاویز پر تفصیلی غور کیا گیا-اجلاس میں جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے صوبائی وزراء نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے بارے میں آراء دیں -وزیراعلی عثمان بزدار نے جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کو بااختیار بنانے کے بارے میں تجاویز کو سراہا- اجلاس میں صوبائی وزراء راجہ بشارت،ہاشم جواں بخت،محسن لغاری، حسنین بہادر دریشک،شوکت لالیکا،حسین جہانیاں گردیزی، اختر ملک،معاون خصوصی اطلاعات فردوس عاشق اعوان، طاہر بشیر چیمہ، چیف سیکرٹری،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلی پنجاب،چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات، ایڈیشنل چیف سیکرٹری ساؤتھ پنجاب اور متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی-