پنجاب میں کوروناکاپھیلائو،نئی پابندیاں عائد،بازارمغرب تک بند

Muhammad Dastagir 12 Mar, 2021 عالمی

لاہور :وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کی زیرصدارت وزیراعلیٰ آفس میں کابینہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کا اہم اجلاس منعقد ہوا۔اجلاس میں کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسزپر قابو پانے کیلئے اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیاگیا۔ اجلاس میں لاہور سمیت دیگر شہروں میں کورونا کے مریضوں کی تعداد میں اضافے پر گہری تشویش کا اظہار کیا گیا اور کوروناٹیسٹوں کی 5فیصد سے زائدپازیٹو شرح والے شہروں میں عوام کی زندگیوں کو محفوظ بنانے کیلئے مزید ضروری اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ لاہور سمیت مخصوص شہروں میں کھیلوں کی سرگرمیاں،جشن بہاراں اور دیگر عوامی اجتماعات پر 2ہفتے کی پابندی ہوگی۔شادی ہالز اورمارکیز میں شادیاں کرنے پربھی 2ہفتے کی پابندی ہوگی۔اجلاس میں مارکیٹس اور بازار مغرب تک بند کرنے کا فیصلہ کیاگیاتاہم دودھ،دہی کی دوکانیں،میڈیکل سٹورز اورتندوروکو پابندی سے استثنیٰ حاصل ہوگا۔فیصلے کے مطابق ریسٹورنٹس سے صرف ٹیک اوے کی اجازت ہوگی۔اجلاس میں مزارات اورسینما ہال بھی دوہفتے کیلئے بند کرنے اورپارکس شام 6بجے بند کرنے کا فیصلہ کیاگیاجبکہ دفاتر میں 50فیصد سٹاف کے ساتھ کام کی اجازت ہوگی اور50فیصد سٹاف ورک ایٹ ہوم کرے گا۔اجلاس میں فیصلہ کیاگیا کہ پبلک ٹرانسپورٹ خصوصاً میٹرو بس سروس اوراورنج لائن میٹروٹرین کیلئے مسافروں کی تعداد ایس او پیز کے مطابق محدود کی جائے گی۔کوروناٹیسٹوں کی 5فیصد سے زائدپازیٹو شرح والے شہروں میں ان فیصلوں کا اطلاق اتوار سے ہوگا اوریہ پابندیاں اگلے دو ہفتے تک نافذ العمل رہیں گی۔محکمہ پرائمری وسکینڈری ہیلتھ باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کرے گا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پنجاب میں پازیٹو کیسوں کی تعداد میں اضافہ ہورہاہے -کورونا پر قابوپانے کے لئے ہر ضروری اقدام اٹھائیں گے-عوام کی صحت سب سے زیادہ مقدم ہے-عوام کی زندگیوں کے تحفظ کے لئے ضروری فیصلے کئے گئے ہیں اورصورتحال کا جائزہ لے کر مزید اقدامات بھی کیے جاسکتے ہیں۔سیکرٹری پرائمری و سکینڈری ہیلتھ نے کورونا کی تازہ ترین صورتحال اورویکسینیشن لگانے کے حوالے سے بریفنگ دی۔بریفنگ میں بتایا گیا کہپنجاب میں 24گھنٹے میں 1632کورونا کے مریض سامنے آئے اورمریضوں کی یہ تعداد24جون 2020ء کو رپورٹ ہوئی تھی۔پنجاب میں 24گھنٹے میں کورونا سے 36اموات ہوئیں اور30روز قبل اتنے مریض کورونا سے جاں بحق ہوئے تھے۔بریفنگ میں بتایا گیا کہ مریضوں کی تعداد میں خطرناک حد تک اضافہ ہورہا ہے اوربچے بھی بڑی تعداد میں کورونا سے متاثرہورہے ہیں۔ لاہور میں کوروناٹیسٹوں کی مثبت آنے کی شرح8فیصد تک پہنچ چکی ہے۔بریفنگ میں بتایا گیا کہ ایک لاکھ سے زائد ہیلتھ ورکرز کو کورونا ویکسین لگ چکی ہے اوربزرگ شہریوں کوبھی کورونا ویکسین لگانے کا عمل جاری ہے۔صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد، چیف سیکرٹری، انسپکٹر جنرل پولیس، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، متعلقہ محکموں کے سیکرٹریز، کمشنر لاہور ڈویژن، سپیشل مانیٹرنگ یونٹ کے سربراہ، طبی ماہرین اور اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی جبکہ اعلیٰ عسکری حکام اور ڈویژنل کمشنرز ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے۔